Boycott Murree, did all hotel owners raise rents?

Boycott Murree

ملک بھر سے چھٹیوں میں سیاحت کے لیے ملکہ کوہسار جانے والے اب وہاں حالیہ برفباری کے دوران پھنسنے والے سیاحوں کو درپیش مشکلات کو دیکھتے ہوئے مری کے بائیکاٹ کی مہم چلا رہے ہیں۔بائیکاٹ کی یہ مہم مری میں سیاحوں کی ہلاکتوں کی وجہ سے نہیں بلکہ شدید برفباری کے دوران ہوٹل کے کرائے اور دیگر ضروریات زندگی کے منہ مانگے دام وصول کرنے کے باعث سوشل میڈیا پر ٹرینڈ کر رہی ہے۔

’بائیکاٹ مری‘، کیا تمام ہوٹل مالکان نے کرائے بڑھا دیے تھے؟

اردو نیوز نے یہ جاننے کی کوشش کی کہ کیا واقعی حالیہ شدید برفباری کے دوران تمام ہوٹل مالکان نے کرائے بڑھا دیے تھے؟مری کے ایک ہوٹل پر کام کرنے والے عمیر عباسی نے اردو نیوز کو بتایا کہ ’اس میں کوئی شک نہیں کہ مری میں کچھ ہوٹل مالکان نے کرائے بڑھا دیے تھے اور دیگر اشیا بھی مہنگی کر دی تھیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’کالی بھیڑیں ہر جگہ ہوتی ہیں اور مری میں صرف مقامی لوگوں کے ہوٹلز نہیں بلکہ دیگر علاقوں سے آ کر بھی لوگ یہ کاروبار کر رہے ہیں۔ میں خود لاہور کے دو ایسے ہوٹل مالکان کو جانتا ہوں جنہوں نے کمروں کے کرائے بڑھا دیے تھے۔

‘عمیر عباسی نے تصویر کا دوسرا رُخ دکھاتے ہوئے کہا کہ وہ بعض ایسے ہوٹل مالکان کو بھی جانتے ہیں کہ جیسے ہی ان کو حالات کا پتہ چلا انہوں نے ملازمین کو یہ ہدایات جاری کیں کہ اگر کوئی ضرورت کے وقت آتا ہے تو اس سے پیسے نہ لیے جائیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’اسی طرح یہاں ایک ایسا ہوٹل بھی ہے جس کی انتظامیہ نے اپنے ہوٹل میں سب کچھ فری کر دیا تھا۔‘

انہوں نے کہا کہ ’حکومت کو سانحے کے رونما ہوجانے کے ہوش آیا اور انہوں نے لوگوں سے گزارش کی کہ برفباری میں گاڑیوں میں پھنسے افراد کی مدد کی جائے۔ اس سے قبل ہی مری ہوٹل ایسوسی ایشن کے ذمہ داران یہ اعلان کر چکے تھے کہ ہوٹلوں میں آنے والے افراد کی ہر ممکن مدد کی جائے۔‘

اس سے قبل اردو نیوز سے بات کرتے ہوئے متعدد سیاحوں نے یہ شکایت کی تھی کہ مری کے علاقوں میں پریشانی کے باوجود ہوٹل مالکان نے کمروں کے کرائے ناقابل برداشت حد تک بڑھا دیے تھے اور دکانداروں کی طرف سے بھی استعمال کی اشیا مہنگے داموں فروخت کی جارہی تھیں۔مری میں امدادی کارروائیوں کے بعد حالات معمول کی طرف آنا شروع ہو گئے ہیں تاہم سوشل میڈیا پر بائیکاٹ مری کا ٹرینڈ جاری ہے۔

متعدد سوشل میڈیا صارفین مری کو چھوڑ کر ملک کے دیگر سیاحتی مقامات جانے کا مشورہ دے رہے ہیں جبکہ کچھ ایسے بھی ہیں جن کا کہنا ہے کہ مری کا بائیکاٹ مسئلے کا حل نہیں۔ ٹوئٹر صارف تسمیہ مغل لکھتی ہیں کہ ’ہم سمجھدار لوگ ہیں ہم جانتے ہیں ہمارے لیے کیا بہتر ہے۔ گھر پر رہیں اور خود کو محفوظ رکھیں۔ ان دنوں مری میں ایک مافیا ہے جو ہر چیز دگنی قیمت پر بیچ رہے ہیں۔‘

بعض سوشل میڈیا صارفین بائیکاٹ کی مہم پر سوال بھی اٹھا رہے ہیں۔ انہی میں سے خرم میمن بھی ہیں جن کا خیال ہے کہ ’بائیکاٹ کیوں؟ قواعد ضوابط کے تحت کیوں نہیں چلایا جا سکتا؟ اگر سیاحت ایک انڈسٹری ہے تو اس کو چلانے والے کہاں ہیں؟‘ 

انہوں نے مزید لکھا کہ ’کرائے اور سہولیات کا فیصلہ کون کرے گا؟ یہ بے کار ٹرینڈ صرف ایڈمنسٹریشن کی غلطیوں پر پردہ ڈالنے کے لیے ہے۔‘ ٹوئٹر صارف طلال خان نے لکھا کہ ’ہم نے کتنی بار مری کا بائیکاٹ کرنے کی کوشش کی، ہر مرتبہ ایسے واقعات ہوتے ہیں۔ ہر حکومت اس مافیا کو کنٹرول کرنے میں ناکام رہی ہے۔‘

Boycott Murree, did all hotel owners raise rents?

Holiday makers from across the country are now campaigning for a boycott of Murree in view of the difficulties faced by tourists stranded there during the recent snowfall. The boycott campaign is trending on social media not because of the deaths of tourists in Murree but because of the high prices of hotel rents and other necessities of life during heavy snowfall.

Urdu News tried to find out whether all the hotel owners had really increased their rents during the recent heavy snowfall. Umair Abbasi, who works at a hotel in Murree, told Urdu News that “there is no doubt that some hoteliers in Murree had increased rents and made other items more expensive.”

“Black sheep are everywhere and in Murree not only local hotels but also people from other areas are doing this business,” he said. I myself know of two hotel owners in Lahore who had raised their room rates. Showing the other side of the picture,

Umair Abbasi said that he also knew some hotel owners who, as soon as they came to know about the situation, issued instructions to the employees that if someone came in time of need, he would not take any money from them. Take it He further said that there is also a hotel here whose management had made everything free in their hotel.

“The government was aware of the tragedy and asked the people to help those trapped in the snow,” he said. Earlier, Murree Hotel Boycott Murree Association officials had announced that all possible help would be extended to those visiting the hotels.

Earlier, while talking to Urdu News, several tourists had complained that despite the unrest in Murree area, hotel owners had raised room rents to unbearable levels and also used consumer goods at exorbitant prices. Boycott Murree Were going After the relief operations in Murree, the situation has started returning to normal, however, the trend of boycotting Murree continues on social media

Many social media users are advising to leave Murree and go to other tourist destinations of the country while there are some who say that boycotting Murree is not the solution to the problem. Twitter user Tasmiya Mughal writes, “We are intelligent people, we know what is best for us. Stay at home and keep yourself safe. There is a mafia in Murree these days that is selling everything at double the price.

Some social media users are also questioning the boycott campaign. Khurram Memon is one of them who thinks, ‘Why boycott? Why can’t it be run under rules? Boycott Murree If tourism is an industry then where are the drivers?

“Who will decide on rent and facilities?” He added. This useless trend is only to cover up the mistakes of the administration. Twitter user Talal Khan wrote, “Every time we tried to boycott Murree, such incidents happen. Every government has failed to control this mafia.

Read More:: Strict laws issued against those going on Hajj without permit

Author: Ayesha KhanI am here! providing you latest News| Technology News |Trending Latest News Updates

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *