Murree Incident: What is the difference between Judicial Inquiry and Commission of Inquiry?

Judicial Inquiry and Commission of Inquiry

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے سیاحتی مقام مری میں شدید برف باری کے باعث 23 افراد کی ہلاکت کے بعد حکومت نے انکوائری کمیٹی تشکیل دی ہے جو مختلف سوالات کے جواب تلاش کرکے اپنی تجاویز دے گی۔تاہم عوامی حلقوں اور اپوزیشن کی جانب سے واقعے کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔

مری واقعہ: جوڈیشل انکوائری اور کمیشن آف انکوائری میں فرق کیا ہے؟

یہ پہلا موقع نہیں کہ کسی واقعے کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ سامنے آیا ہے بلکہ پاکستان میں ہر بڑے واقعے کے بعد ایسے ہی مطالبات سامنے آتے ہیں۔ پاکستان کی تاریخ میں سب سے پہلا جوڈیشل کمیشن ملک کے پہلے وزیراعظم خان لیاقت علی خان کے قتل کی تحقیقات کے لیے بنایا گیا تھا جبکہ ماضی قریب میں ماڈل ٹاون، اے پی ایس حملہ کیس، براڈ شیٹ جوڈیشل انکوائری کمیشن اور اسامہ ستی قتل کیس پر جوڈیشل انکوائری کروائی گئی۔ بینظیر قتل کیس کی جوڈیشل انکوائری بھی اس کی ایک مثال ہے۔

جوڈیشل انکوائری کیا ہوتی ہے؟ جوڈیشل انکوائری، عام انکوائری اور جوڈیشل کمیشن کے ذریعے انکوائری میں فرق کیا ہوتا ہے؟ اور ان کی سفارشات پر عمل درآمد کی قانونی حیثیت کیا ہوتی ہے؟ماہر قانون اکرام چوہدری نے اردو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’بنیادی طور پر انتطامی آرڈرز کے تحت جوڈیشل انکوائری کروائی جاتی ہے جس میں کسی بھی جوڈیشل آفیسر کو مقرر کر دیتے ہیں جو یہ دیکھتا ہے کیا ہوا؟ کیوں ہوا اور کیا ہوسکتا تھا؟ یہ انکوائری بنیادی طور پر جرائم کے واقعات پر کی جاتی ہے۔

جوڈیشل انکوائری اور کمیشن آف انکوائری میں فرق؟

کسی بھی عوامی اہمیت کے معاملے میں محکمانہ غفلت جانچنے یا حقائق کا جائزہ لینے کے لیے جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کیا جاتا ہے کہ جوڈیشل کمیشن قائم کیا جائے تاہم قانون کی زبان میں اسے جوڈیشل کمیشن نہیں کہا جاتا بلکہ کمیشن آف انکوائری کہا جاتا ہے۔ جوڈیشل انکوائری صرف قابل دست اندازی جرائم میں پولیس یا قانون نافذ کرنے والے اداروں کی غفلت، کوتاہی یا کردار کا تعین کرنے کے لیے کی جاتی ہے۔

کمیشن آف انکوائری کا قیام ایکٹ کے ذریعے عمل میں لایا جاتا ہے جو پہلے 1956 کا لاگو تھا جبکہ اب 2017 کا ایکٹ نافذالعمل ہے۔ جس کے لیے حکومت خود ہی ٹی او آرز بھی دیتی ہے جن کی روشنی میں کمیشن تحقیقات کرکے اپنی رپورٹ مرتب کرتا ہے۔ کمیشن آف انکوائری ریٹائرڈ جج، یا حکومت سمجھے تو حاضر سروس جج پر بھی مشتمل ہو سکتا ہے۔ حاضر سروس جج کی خدمات حاصل کرنے کے لیے حکومت کو متعلقہ چیف جسٹس سے درخواست کرنا پڑتی ہے۔

 انکوائری کمیشن ایکٹ کے تحت کمیشن کے ارکان کی تعداد ایک یا اس سے زائد بھی ہو سکتی ہے ارو اس میں ججز کے علاوہ بھی افراد کو شامل کیا جا سکتا ہے۔  
پاکستان میں مشہور ترین کمیشن آف انکوائری میں سقوط ڈھاکہ سے متعلق بننے والا حمودالرحمان کمیشن، جسٹس منیر کمیشن، ایبٹ آباد آپریشن کمیشن، 2013 کے انتخابات میں مبینہ دھاندلی سے متعلق کمیشن اور لاپتا افراد سے متعلق کمیشن شامل ہیں۔ حالیہ تاریخ میں اس کی مثال چینی کی ذخیرہ اندوزی سے متعلق انکوائری کمیشن ہے۔

ایڈووکیٹ عمر گیلانی کہتے ہیں کہ جوڈیشل انکوائری ان جرائم کے تناظر میں کی جاتی ہے جیسے پولیس کی تحویل میں کسی فرد کے ہلاک ہو جانے، کسی علاقے میں غیرمعمولی قتل و غارت جہاں پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی غفلت کا تعین کرنا ہو جوڈیشل انکوائری ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ کسی بھی معاملے کی انکوائری کمیشن آف انکوائری کے ذریعے ہی کی جا سکتی ہے۔

انتظامی انکوائری

مری کے واقعے پر حکومت نے بیوروکریسی کے افسران کی پر مشتمل کمیٹی بنائی ہے جب کہ پیر کو قومی اسمبلی میں خطاب میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے بھی اسے گھناؤنا مذاق قرار دیا ہے۔قانونی ماہرین کے مطابق کسی بھی مسئلے پر حکومت سول سروس کے افسر یا افسران کے ذریعے انکوائری کروائے تو اسے عام انکوائری، محکمانہ یا انتظامی انکوائری کہتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق انتظامی انکوائری محکمانہ قوانین کے تحت ہوتی ہے جن میں کارکردگی اور نظم و نسق قواعد کو پیش نظر رکھا جاتا ہے۔ ان قوانین کے تحت انکوائری کمیٹی کسی معاملے میں متعلقہ افسران کی کارکردگی اور ذمہ داریوں کا جائزہ لے کر ان میں کسی غفلت اور کوتاہی کی نشان دہی کرتی ہے۔

انکوائری کی سفارشات پر عمل درآمد کیسے ہوتا ہے؟

ماہرین کے مطابق حکومت کمیشن آف انکوائری کی سفارشات پر عمل درآمد کی پابند نہیں ہوتی بلکہ زیادہ تر تو رپورٹ سامنے ہی نہیں لائی جاتی۔  پاکستان کی تاریخ میں دیکھا جائے تو لیاقت علی خان قتل کیس کی جوڈیشل انکوائری ہو یا سقوط ڈھاکہ سے متعلق حمود الرحمان کمیشن کی رپورٹ، اس پر کبھی عمل درآمد نہیں ہوا۔

ماہرین قانون کے مطابق کوئی بھی انکوائری کمیٹی یا کمیشن جب انکوائری کرتا ہے تو وہ اپنی رپورٹ مرتب کرتا ہے۔ حقائق کا جائزہ لینے کے بعد اپنی سفارشات مرتب کرتا ہے اور بعض اوقات ذمہ داروں کا تعین بھی کر دیتا ہے لیکن حکومتیں ضروری نہیں ہے کہ اس پر عمل درآمد کی پابند ہوں۔

ماہر قانون چوہدری اشرف گجر کا کہنا ہے کہ ’کمیشن آف انکوائری کا کامایڈووکیٹ عمر گیلانی اور اکرام چودھری کے مطابق کمیشن آف انکوائری کی رپورٹس اور سفارشات پر عمل درآمد کم ہی ہوتا ہے تاہم بیوروکریسی کی انکوائری میں عمل درآمد کی رپورٹ جمع کرانا ہوتی ہے۔

اس لیے فرضی ہی سہی کچھ نہ کچھ کارروائی ہوتی ضرور ہے۔  رپورٹ مکمل کرنے کے بعد ختم ہو جاتا ہے، تاہم حکومتیں بعض اوقات ان کی سفارشات پر مزید تادیبی کارروائی کرتی ہیں اور بعض اوقات چپ سادھ لیتی ہیں۔‘

Murree Incident: What is the difference between Judicial Inquiry and Commission of Inquiry?

The government has formed an inquiry committee to find out the answers to various questions after 23 people were killed due to heavy snowfall in the tourist destination of Murree in Pakistan’s Punjab province. However, the public and the opposition are demanding a judicial inquiry into the incident. Judicial Inquiry and Commission of Inquiry

This is not the first time that a demand for a judicial inquiry into an incident has come to light but such demands have come up after every major incident in Pakistan. The first judicial commission in the history of Pakistan was set up to investigate the assassination of the country’s first prime minister Khan Liaquat Ali Khan. Judicial inquiry was conducted. The judicial inquiry into the Benazir Bhutto assassination case is another example.

What is a Judicial Inquiry? What is the difference between Judicial Inquiry, General Inquiry and Inquiry through Judicial Commission? And what is the legal status of implementing their recommendations? Talking to Urdu News, legal expert Ikram Chaudhry said,

“Basically, judicial inquiry is conducted under administrative orders in which any judicial officer is appointed who sees what happened. Judicial Inquiry and Commission of Inquiry Why did it happen and what could have happened? This inquiry is primarily about crime.

Difference between Judicial Inquiry and Commission of Inquiry?

Judicial Inquiry is required to set up a Judicial Commission to investigate departmental negligence or facts in any matter of public importance. However, in the language of law it is not called Judicial Commission but Commission of Inquiry. Judicial inquiries are conducted only to determine the negligence, omission or role of the police or law enforcement agencies in committing crimes.

The Commission of Inquiry is set up by an Act which was earlier enacted in 1956 and is now in force. For which the government itself also gives TORs in the light of which the commission investigates and prepares its report. The Commission of Inquiry may also consist of a retired judge, or a serving judge, as the government deems fit.

The government has to apply to the concerned Chief Justice to get the services of a serving judge. Judicial Inquiry and Commission of Inquiry Under the Commission of Inquiry Act, the number of members of the Commission may be one or more and may include persons other than judges. Judicial Inquiry and Commission of Inquiry

The most famous commissions of inquiry in Pakistan include the Hamoodul Rehman Commission on the Fall of Dhaka, the Justice Munir Commission, the Abbottabad Operations Commission, the Commission on Alleged Fraud in the 2013 Elections and the Commission on Missing Persons. An example of this in recent history is the Commission of Inquiry into Sugar Storage.

Advocate Omar Gilani says the judicial inquiry is being conducted in the context of crimes such as the death of an individual in police custody, an extraordinary murder in an area where the negligence of the police and other law enforcement agencies has to be ascertained. There is a judicial inquiry. In addition, any matter can be investigated only through the Commission of Inquiry.

Administrative Inquiry

The government has formed a committee of bureaucrats on the Murree incident, while opposition leader Shahbaz Sharif in his address to the National Assembly on Monday also termed it as a heinous joke. According to legal experts, if the government inquires into any issue through a civil service officer or officers, it is called general inquiry, departmental or administrative inquiry.

According to experts, administrative inquiries are conducted under departmental rules that take into account performance and discipline rules. Judicial Inquiry and Commission of Inquiry Under these rules, the inquiry committee reviews the performance and responsibilities of the officers concerned in a case and points out any negligence or omission in them.

How are the recommendations of the inquiry implemented?

According to experts, the government is not bound to implement the recommendations of the Commission of Inquiry and most of the time the report is not made public. In the history of Pakistan, whether it was a judicial inquiry into the Liaquat Ali Khan murder case or the report of the Hamoodur Rehman Commission on the fall of Dhaka, it was never implemented.

According to legal experts, any inquiry committee or commission compiles its report when it conducts an inquiry. After reviewing the facts, it makes its recommendations and sometimes identifies those responsible, but governments are not necessarily bound to implement them.

Legal expert Chaudhry Ashraf Gujjar says that the work of the Commission of Inquiry ends after the completion of the report, however, governments sometimes take further disciplinary action on their recommendations and sometimes remain silent.

Judicial Inquiry and Commission of Inquiry According to advocates Omar Gilani and Ikram Chaudhry, reports and recommendations of the Commission of Inquiry are rarely implemented, but the bureaucracy’s inquiry has to submit an implementation report. Therefore, even if it is hypothetical, some action must be taken.

Read More:: Strict laws issued against those going on Hajj without permit

Author: Ayesha KhanI am here! providing you latest News| Technology News |Trending Latest News Updates

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *