Digital Banks will now open in Pakistan, announce the issuance of SBP license.

Digital  Banks will now open in Pakistan

While announcing the issuance of licenses for digital banks in the country by the State Bank of Pakistan, the relevant regulations for them have also been clarified. Digital  Banks will now open in Pakistan According to the Central Bank of Pakistan, this is the first step towards the introduction of a fully digital bank that will provide all banking services, from digital account opening to deposit and lending.

According to SBP, Digital Bank is the culmination of the digital journey that the banking industry embarked on many years ago. Digital  Banks will now open in Pakistan Initially, it has been decided to issue five licenses to digital banks, for which applications will be received till March 31, 2022.

How will digital banking differ from ordinary banks?

Digital banks introduced in Pakistan will provide all services to the customer like traditional banks, however the customer will not have to go to the bank branch for this purpose. Digital Bank will provide other services to the customer including opening an account through digital platform or electronic means without calling a bank branch. Digital  Banks will now open in Pakistan According to SBP, customers using the new digital bank services will no longer have to go to the bank branch in person.

Types and services of digital banking

Under the new framework, SBP will issue licenses to two types of digital banks. The first type will be Digital Retail Bank (DRB) and the second will be Digital Full Bank (DFB). Digital  Banks will now open in Pakistan The digital retail bank will primarily provide services to retail customers, while the digital full bank can work with retail customers as well as businesses and corporations.

According to the SBP framework, digital banks are required to establish a regular place of business in Pakistan for management, staff, and other support operations, which is an important point of contact for various stakeholders, including the central bank and other regulators. Will work as The capital required for a digital bank will also be less than the capital required for existing bank branches, so new technology-savvy entrepreneurs will also be able to come to this new type of bank.

According to the SBP, the minimum capital required for the establishment of DRB in the pilot phase will be Rs 1.5 billion, which will be gradually increased to Rs 4 billion over a period of three years. Digital  Banks will now open in Pakistan

The DRB will be licensed upon completion of the transitional phase.

This will require the digital retailer bank to complete the phased growth phase with minimum capital requirements. According to the details released by SBP, both interest and Islamic types of digital banks can be licensed. While interest banking institutions can also provide Islamic banking services under DRB and DFB Islamic Banking Windows.

Read More:: Today Gold Price in Pakistan On 5 January 2022

پاکستان میں اب ڈیجیٹل بینک کھلیں گے، سٹیٹ بینک کا لائسنس کے اجرا کا اعلان

سٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے ملک میں ڈیجیٹل بینکوں کے لیے لائسنس کے اجرا کا اعلان کرتے ہوئے ان کے لیے متعلقہ ضوابط بھی واضح کیے گئے ہیں۔ پاکستان کے مرکزی بینک کے مطابق یہ ایک مکمل ڈیجیٹل بینک متعارف کرانے کی جانب پہلا قدم ہے جو ڈیجیٹل ذرائع سے اکاؤنٹ کھولنے سے لے کر ڈپازٹ اور قرض دینے سمیت تمام بینکاری خدمات فراہم کریں گے۔

سٹیٹ بینک کے مطابق ڈیجیٹل بینک، اس ڈیجیٹل سفر کی انتہا ہے جسے بینکاری صنعت نے کئی برس قبل شروع کیا تھا۔ ابتدائی طور پر ڈیجیٹل بینکوں کے پانچ لائسنس جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس کے لیے درخواستیں 31 مارچ 2022 تک وصول کی جائیں گی۔ ڈیجیٹل بینکوں کا نیا فریم ورک ملک میں بینکاری کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے ساتھ صارف کو بھی بہتر خدمات مہیا کر سکے گا۔

ڈیجیٹل بینک عام بینکوں سے کیسے مختلف ہو گا؟

پاکستان میں متعارف کرائے جانے والے ڈیجیٹل بینک روایتی بینکوں کی طرح صارف کو تمام خدمات فراہم کریں گے، البتہ اس مقصد کے لیے صارف کو بینک برانچ نہیں جانا پڑے گا۔ ڈیجیٹل بینک کی جانب سے صارف کو اکاؤنٹ کھولنے سمیت دیگر خدمات بینک برانچ بلائے بغیر ڈیجیٹل پلیٹ فارم یا الیکٹرانک ذرائع سے مہیا کی جائیں گی۔ سٹیٹ بینک کے مطابق نئے ڈیجیٹل بینک کی خدمات استعمال کرنے والے صارفین کو اب بذات خود بینک برانچ نہیں جانا ہو گا۔

ڈیجیٹل بینکوں کی اقسام اور خدمات

نئے فریم ورک کے تحت سٹیٹ بینک دو قسم کے ڈیجیٹل بینکوں کا لائسنس جاری کرے گا۔ ان میں پہلی قسم ڈیجیٹل ریٹیل بینک (ڈی آر بی) اور دوسری ڈیجیٹل فل بینک (ڈی ایف بی) ہو گی۔ ڈیجیٹل ریٹیل بینک بنیادی طور پر ریٹیل صارفین کو خدمات مہیا کرے گا جب کہ ڈیجیٹل فل بینک ریٹیل صارفین کے ساتھ ساتھ کاروباری اداروں اور کارپوریٹ اداروں کے ساتھ کام کر سکتا ہے۔

سٹیٹ بینک کے فریم ورک کے مطابق ڈیجیٹل بینکوں کے لیے لازم ڈیجیٹل بینک کے لیے درکار سرمایہ بھی موجودہ بینک برانچوں کے لیے درکار سرمائے سے کم ہو گا، چنانچہ ٹیکنالوجی کا ادراک رکھنے والے نئے انٹرپرینورز بھی اس نئے طرز کے بینک کی جانب آ سکیں گے۔ہے کہ وہ مینجمنٹ، عملے، دیگر سپورٹ آپریشنز کے لیے پاکستان میں اپنے کاروبار کی باقاعدہ جگہ قائم کریں جو مرکزی بینک اور دیگر ریگولیٹرز سمیت مختلف سٹیک ہولڈرز کے لیے رابطے کے اہم مرکز کے طور پر کام کرے گا۔

سٹیٹ بینک کے مطابق تجرباتی مرحلے میں ڈی آر بی کے قیام کے لیے کم از کم سرمایہ ڈیڑھ ارب روپے ہو گا جو تین سال کی عبوری مدت کے دوران بتدریج بڑھا کر چار ارب روپے کر دیا جائے گا۔ عبوری مرحلہ پورا کرنے کے بعد ڈی آر بی کو لائسنس دیا جائے گا۔ اس کے لیے لازم ہو گا کہ ڈیجیٹل ریٹیلر بینک کم از کم سرمائے کی شرائط کے ساتھ مرحلہ وار ترقی کے دور برس مکمل کرے۔

سٹیٹ بینک کی جاری کردہ تفصیل کے مطابق سودی اور اسلامی، دونوں طرح کے ڈیجیٹل بینک کے لیے لائسنس حاصل کر سکتے ہیں۔ جب کہ سودی بینکاری والے ادارے بھی ڈی آر بی اور ڈی ایف بی اسلامی بینکاری ونڈوز کے تحت اسلامی بینکاری خدمات فراہم کر سکتے ہیں۔

Author: Ayesha KhanI am here! providing you latest News| Technology News |Trending Latest News Updates

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *