paise per unit price of electricity

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیرٹی اتھارٹی (نیپرا) کی جانب سے بجلی کے بلوں میں اضافے کی منظوری کے بعد جنوری کے بلوں میں صارفین کو اضافی رقم ادا کرنا ہو گی۔
نیپرا کی جانب سے بجلی کی فی یونٹ قیمت میں چار روپے 30 پیسے کا اضافہ کیا گیا ہے۔

بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 4 روپے 30 پیسے کا مزید اضافہ

نیپرا نے بجلی کی قیمت میں حالیہ اضافہ نومبر 2021 کے فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں کیا گیا ہے۔حالیہ اضافے کے بعد بجلی کی فی یونٹ قیمت میں ہونے والا اضافہ جنوری کے بلوں میں وصول کیا جائے گا۔

نیپرا کے سرکلر کے مطابق نومبر میں ایندھن کی اصل قیمت 8 روہے چار پیسے فی کلو واٹ رہی تھی جب کہ وصول شدہ رقم 3.73 روپے کلوواٹ تھی۔اعلامیے کے مطابق بجلی کی فی یونٹ قیمت میں اضافے کا اطلاق کراچی کے صارفین کو بجلی فراہمی کے ذمہ دار ادارے کے الیکٹرک اور لائف لائن صارفین کے بلوں پر نہیں ہو گا۔

گزشتہ ہفتے نیپرا کی جانب سے کے الیکٹرک کو اجازت دی گئی تھی کہ وہ صارفین نے 1.91 ارب، فی یونٹ 1.07 روپے کے حساب سے وصول کر لے۔

Further increase of Rs. 4 30 paise per unit price of electricity

Consumers will have to pay extra in January bills after the National Electric Power Regulatory Authority (NEPRA) approves the increase in electricity bills. NEPRA has increased the price of electricity by Rs 4.30 per unit.

NEPRA has recently increased the price of electricity in the context of the November 2021 fuel adjustment. The increase in the unit price of electricity after the recent increase will be borne by the January bills. According to the NEPRA circular, the actual price of fuel in November was 8 rupees four paise per kilowatt while the amount received was Rs 3.73 per kilowatt.

According to the statement, the increase in unit price of electricity will not apply to the bills of electric and lifeline customers of the company responsible for supplying electricity to Karachi consumers. Last week, NEPRA allowed K Electric to collect Rs 1.91 billion from consumers at Rs 1.07 per unit.

Read More:: The party in the lockdown demanded the resignation of British Prime Minister Boris Johnson

Advertisement

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here