Fake Hajj booking, investigation launched against FIA agents

investigation launched against FIA agents

پاکستان کی وزارت مذہبی امور نے شہریوں کو متنبہ کیا ہے کہ وہ کسی بھی ایجنٹ کو حج کے نام پر کوئی رقم نہ دیں۔  دوسری طرف وزارت مذہبی امور اور ایف آئی اے نے مشترکہ طور پر ایسے ٹریول ایجنٹس کے خلاف بڑے پیمانے پر تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے جو حج کے نام پر رقوم بٹور رہے ہیں۔  

جعلی حج بکنگ، ایف آئی اے کی ایجنٹوں کے خلاف تحقیقات شروع

واضح رہے کہ ابھی تک سعودی عرب کی جانب سے حج کے بارے میں کسی پالیسی کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ترجمان وزارت مذہبی امور عمر بٹ نے اردو نیوز کو تصدیق کی ہے کہ ایسی شکایات موصول ہوئی ہیں جن میں ایجنٹ یا ان کے کارندے لوگوں سے حج کروانے کے نام پر پیسے وصول رہے ہیں۔  

عمر بٹ کے مطابق کہ ’وزارت کے مشاہدے میں یہ بات آئی ہے کہ بعض نجی ٹور آپریٹرز اور اشخاص براہ راست یا اپنے غیر متعلقہ ایجنٹس کے ذریعے لوگوں سے حج درخواستوں کے نام پر رقم وصول کر رہے ہیں۔‘  انہوں نے بتایا کہ یہ عمل نہ صرف غیر قانونی بلکہ قابل گرفت بھی ہے۔  ترجمان کے مطابق ’ایسے ٹریول ایجنٹس کی چھان بین شروع کر دی گئی ہے جبکہ ان کو وارننگ بھی جاری کی گئی ہے کہ اس غیر قانونی کام میں ملوث پائے جانے والے اشخاص کے خلاف تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔‘  

ایک سوال کے جواب میں کہ حج کے نام پر بکنگ کا سلسلہ کیوں شروع ہوا ہے کیا اس کی بابت کوئی بات سامنے آئی ہے؟ تو ترجمان وزارت حج کا کہنا تھا کہ ’اصل میں دو ہفتے قبل وزارت نے مختلف بینکوں کو امپریشن آف انٹرسٹ دیا تھا تاکہ حج کے سلسلے میں رقوم اکٹھی کرنے کا لائحہ عمل مرتب کیا جا سکے۔‘

انہوں نے بتایا کہ ’یہ ٹینڈر وغیرہ ہمیں چھ ہفتے پہلے کرنا پڑتے ہیں تاکہ جب حج پالیسی کا اعلان ہو تو ہماری تیاری مکمل ہو۔ بس اسی معلومات کو ایجنٹ مافیا نے اپنے مقصد کے لیے استعمال کرنا شروع کردیا۔‘  ترجمان وزارت حج نے بتایا کہ ’اس سے بھی اہم بات ہے کہ کچھ عرصے سے مختلف واٹس ایپ گروپوں میں ایجنٹوں نے اشتہار دینا شروع کردیے ہیں کہ ایک تو حج پیکج کا اپنی طرف سے اعلان کر رہے ہیں اور دوسرا لوگوں کو غلط معلومات دے رہے ہیں کہ حج کے لیے خدام کی بھرتی شروع ہے۔‘ 

ترجمان وزارت مذہبی امور نے بتایا کہ یہ ایک سنجیدہ معاملہ تھا اس لیے ایسے عناصر کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کیا گیا ہےکیونکہ ایسی کوئی پالیسی موجود نہیں نہ ہی حج اور نہ ہی خدام کے حوالے سے۔ ان واٹس ایپ گروپوں کے ذریعے ان ایجنٹس کا سراغ لگایا جا رہا ہے جو لوگوں کو گمراہ کر رہے ہیں۔  

’یہ سادہ لوح لوگوں کو بیوقوف بنا کر ان کے میڈیکل کے نام پر بھاری رقوم لے رہے ہیں، کچھ لوگوں نے براہ راست بھی شکایات کی ہیں۔اس لیے وزارت اس حوالے سے متحرک ہوئی ہے اور عوام کو تاکید کی جاتی ہے کہ جب تک سرکاری طور پر حج پالیسی کا اعلان نہ ہو جو کہ قومی اخبارات اور ٹی وی پر نمایاں نشر ہوگا اس کے علاوہ وزارت کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر بھی درست معلومات موجود ہوں گی تب تک کسی بھی ایجنٹ کے ہاتھوں بے وقوف نہ بنیں۔‘  

Fake Hajj booking, investigation launched against FIA agents

Pakistan’s Ministry of Religious Affairs has warned citizens not to pay any money in the name of Hajj to any agent. investigation launched against FIA agents On the other hand, the Ministry of Religious Affairs and the FIA ​​have jointly launched a massive investigation against travel agents who are collecting money in the name of Hajj.

It should be noted that Saudi Arabia has not yet announced any policy regarding Hajj. investigation launched against FIA agents Spokesperson of the Ministry of Religious Affairs Omar Butt has confirmed to Urdu News that such complaints have been received in which agents or their agents are receiving money from people in the name of performing Hajj.

According to Omar Butt, “the ministry’s observation is that some private tour operators and individuals are receiving money from people directly or through their unrelated agents in the name of Hajj applications.” He said that this act is not only illegal but also arrestable.
According to the spokesperson, “Investigation of such travel agents has been started and a warning has been issued to them that disciplinary action will be taken against those found involved in this illegal activity.”

In response to a question as to why the process of booking in the name of Hajj has started, has anything been revealed about it? A spokesman for the Ministry of Hajj said, “In fact, two weeks ago, the ministry had given impressions of interest to various banks so that a plan could be drawn up to raise funds for Hajj.” We have to do these tenders six weeks in advance so that when the Hajj policy is announced, our preparations are complete,” he said. The agent mafia just started using this information for its own purpose.

A spokesman for the Ministry of Hajj said, “More importantly, for some time now, agents in various WhatsApp groups have been advertising that they are announcing Hajj packages on their own and giving false information to the public.” investigation launched against FIA agents The recruitment of Khudaim for Hajj has started.

A spokesman for the Ministry of Religious Affairs said that this was a serious matter and therefore it was decided to take action against such elements as there was no such policy regarding Hajj or Khudaim. Agents who are misleading people are being tracked down through these WhatsApp groups. investigation launched against FIA agents

“These naive people are fooling people and taking huge sums of money in the name of their medical care. Some people have even complained directly. Therefore, the ministry has been mobilized in this regard and the people are urged to Don’t be fooled by any agent unless there is an official announcement of Hajj policy which will be prominently broadcast on national newspapers and TV. Besides, there will be accurate information on the social media accounts of the ministry.

Read More:: The party in the lockdown demanded the resignation of British Prime Minister Boris Johnson

Author: Ayesha KhanI am here! providing you latest News| Technology News |Trending Latest News Updates

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *