Click social media but be careful

آج کے دور میں بہت کم لوگ ایسے ہوں گے جن کے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر اکاؤنٹ نہ ہوں، روز ہی لوگ چیٹنگ، پوسٹس، لائیکس، ٹویٹس، شیئر، ری ٹویٹس سمیت کئی مواصلاتی کلِک کرتے ہیں جو بہت اہمیت کا حامل ہیں، جس سے قبل کچھ باتیں جاننا ضروری ہے۔

سوشل میڈیا ۔۔۔ کلِک کیجیے مگر دھیان سے

سیدتی میگزین نے میڈم ڈاٹ نیٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ سوشل میڈیا کے استعمال کے آداب کی ماہر زہرہ النجر کہتی ہیں کہ فیس بک ہو، ٹوئٹر، انسٹاگرام یا کوئی اور، ان کے استعمال کے کچھ اصول ہیں جن پر عمل کیا جائے تو مسائل کا سامنا نہیں کرنا پڑتا۔

صارفین

سب سے پہلی یاد رکھنے والی بات یہ ہے کہ جس طرح آپ سوشل میڈیا پلیٹ فارم یوز کر رہے ہیں اسی طرح دنیا میں کروڑوں لوگ بھی اسے استعمال کرتے ہیں جن میں ایسے لوگ بھی ہوتے ہیں جو بری نیت کے ساتھ نیٹ کی طرف آتے ہیں، آپ کو ان کا شکار ہرگز نہیں ہونا چاہیے۔

ان کے خاص مقاصد ہو سکتے ہیں جن میں سب سے خطرناک نفرت پھیلانا ہے۔ اس لیے آپ کو خیال رکھنے کی ضرورت ہے کہ جو بندہ آپ کی فرینڈ لسٹ میں ہے یا پھر نہیں ہے ضروری نہیں وہ ویسا ہی ہو جو اس کا پروفائل بتا رہا ہے۔ وہ پورا اکاؤنٹ فیک ہو سکتا ہے، اس لیے محتاط رہیں۔

نجی معلومات

یاد رکھیں سوشل میڈیا حقیقی زندگی نہیں ہے وہاں بہت کچھ ایسا ہو سکتا ہے جو ویسا نہیں جیسا نظر آ رہا ہے۔ زندگی کے زیادہ تر معاملات کو فلمانے اور پھر ان کو سوشل میڈیا پر ڈالنے کی توجیہہ پیش نہیں کی جا سکتی۔ سوشل میڈیا پر موجود تمام لوگ آپ کے وہ جگری دوست نہیں ہیں جن کے ساتھ آپ اپنے ذاتی معاملات بھی شیئر کر سکتے ہیں، وہاں ایسے لوگ بھی ہیں جو ان سے ناجائز فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔

جعلی اکاؤنٹ

سوشل میڈیا پر جعلی اکاؤنٹس کی بھرمار ہے، اگر کسی اکاؤنٹ سے نامناسب مواد شیئر کیا جا رہا ہے تو اسی پلیٹ فارم پر اسے رپورٹ کرنے کا آپشن بھی ہوتا ہے، اسے خود بھی رپورٹ کریں اور دوستوں سے بھی کروائیں، اس پر اس پلیٹ فارم کی انتظامیہ اس اکاؤنٹ کا جائزہ لیتی ہے اور فیک ثابت ہونے پر بند کر دیتی ہے۔

کلِک کریں مگر دھیان سے

آج کل کسی کو کچھ بتانا ہو تو اس کا پورا لنک کاپی کر کے بھیج دیا جاتا ہے، جس پر کلک کیا جائے تو آپ براہ راست اس ویب سائٹ، پوسٹ وغیرہ پر چلے جاتے ہیں اور چونکہ کچھ سائٹس کوکیز کا ریکارڈ رکھتی ہیں اس لیے آپ کا اکاؤنٹ نیم وہاں چلا جاتا ہے جس کو بعد میں استعمال کیا جا سکتا ہے۔اسی طرح کچھ لنکس میں وائرس ہوتے ہیں، جیسے آپ ان پر کلک کرتے ہیں وہ آپ کے فون، کمپیوٹر یا لیپ ٹاپ میں گھس جاتے ہیں جو فائلوں کو نقصان پہنچا سکتے ہیں۔ جبکہ ہیکر بھی ایسے کلکس سے ناجائز فائدہ اٹھاتے ہیں۔

اکاؤنٹ سیٹنگ

اکثر لوگ سوشل میڈیا پر اکاؤنٹ بنا لیتے ہیں لیکن سیٹنگ میں جانے کا تکلف نہیں کرتے حالانکہ ان کو اپنی شخصیت اور کام کے حوالے سے سیٹ کرنا بہت ضروری ہے۔ اسی میں آپشن ہوتا ہے کہ کون آپ کی پروفائل تک رسائی رکھ سکتا ہے، کون کمنٹ کر سکتا ہے اور پوسٹ کس کے پاس جائے گی؟ اگر آپ نے بھی ایسا نہیں کیا تو آج ہی سیٹنگ میں جائیں۔

بہت زیادہ شیئرنگ نہ کریں

24 گھنٹے ہی تصاویر شیئر کرنے اور پوسٹس کرنے کی ضرورت نہیں، دلچسپ اور معلومات پر منبی ہوں تو دن میں دو چار پوسٹس ہی کافی ہیں۔ اگر آپ بلاوجہ ہی بغیر کسی خاص موقع کے چیزیں شیئر کرتے چلے جائیں گے تو اس سے آپ کے فالوورز بور ہو سکتے ہیں اور ان فالو بھی کر سکتے ہیں۔

مبالغہ آرائی سے پرہیز

اکثر پوسٹس مبالغے پر مشتمل ہوتی ہیں جس سے لوگوں کے ذہن میں یہ خیال بیٹھ سکتا ہے کہ آپ کسی خاص مقصد کے تحت ایسا کر رہے ہیں، اس سے آپ کے بارے میں ان کی رائے تبدیل ہو سکتی ہے۔

مزاح کا پہلو

کوئی پوسٹ کرنی ہو یا پھر کسی پوسٹ پر کمنٹ، ہلکا پھلکا انداز اپنائیں جس میں مزاح کا پہلو ہو، اس سے لوگ لطف اندوز ہوتے ہیں۔ تاہم انتہائی سنجیدہ نوعیت کی پوسٹس جیسے بیماری یا وفات وغیرہ پر سنجیدہ کمنٹس ہی ہونے چاہییں۔

دوسروں کے جذبات کا خیال رکھیں

اگر کسی کی پوسٹ میں گرامر یا کوئی اور غلطی ہے تو اس کا ذکر عام کمنٹس میں کر کے کم عملی کا احساس دلانے کے بجائے پرائیویٹ میسج میں جا کے بتائیں تو بہتر ہو گا، تاکہ اسے لگے کہ آپ اس کی کم علمی کا مذاق نہیں اڑا رہے۔

دوسروں کی تصویریں

لوگوں یا دوستوں کی تصویریں ان کی اجازت کے بغیر ہرگز پوسٹ نہ کریں۔ اگر آپ کے کسی دوست کی سالگرہ ہے یا آ رہی ہے اور آپ اس کو وش کرنا چاہتے تو کیک یا کسی اور چیز کی تصویر لگا کے کر سکتے ہیں، اگر آپ سمجھتے ہیں کہ دوست کی تصویر بھی شامل کی جائے تو پھر اس سے قبل ان سے پوچھ لیں۔

لائیکس کا مطالبہ نہ کریں

سوشل میڈیا پر یقیناً آپ کو پوسٹس کرنی چاہییں لیکن ان کے لیے لائیکس یا شیئر کرنے کا مطالبہ نہیں کرنا چاہیے بلکہ یہ معاملہ اپنے آن لائن دوستوں پر چھوڑ دینا چاہیے کہ اگر وہ انہیں پسند ہے تو لائیک کریں۔اسی طرح دوسرے لوگوں سے فالو اپ مانگنے پر اصرار نہ کریں۔

Click social media but be careful

In this day and age, there will be very few people who do not have an account on social media platforms. Every day, people click on many communications, including chatting, posts, likes, tweets, shares, retweets, which are very important. It is important to know a few things beforehand. “Whether it’s Facebook, Twitter, Instagram or anyone else, there are certain rules of their use that should be followed,” says Zaidi Al-Najjar, an expert on social media etiquette, citing Madame.net. No problems. Click social media but be careful

Consumers

The first thing to remember is that just as you are using a social media platform, so are millions of people around the world using it, including those who come to the net with bad intentions. You must not fall prey to them. They may have specific goals, the most dangerous of which is to spread hatred. So you need to make sure that the person who is on your friend list or not is not necessarily the one who is telling their profile. That whole account can be fake, so be careful.

Private information

Remember social media is not real life there can be a lot that is not what it seems. Filming most of life’s issues and then posting them on social media cannot be justified. Not all the people on social media are your best friends with whom you can share your personal affairs, there are people who can take advantage of them.

Fake account

There are a lot of fake accounts on social media, if inappropriate content is being shared from an account then there is an option to report it on the same platform, report it yourself and share it with friends, on this platform ‘S management reviews this account and closes it if it is found to be fake.

Click but carefully

Nowadays, if someone has something to say, the full link is copied and sent, which when clicked, you go directly to this website, post etc. and since some sites have a record of cookies. Your account name goes where it can be used later. Similarly, some links contain viruses, which, when you click on them, get into your phone, computer or laptop and can damage the files. Even hackers take advantage of such clicks.

Account settings

Most people create an account on social media but do not bother to go to the setting, although it is very important to set them in terms of their personality and work. This includes the option of who can access your profile, who can comment and to whom the post will go. If you haven’t already, go to Settings today.

Don’t share too much

There is no need to share and post photos 24 hours a day, just two or four posts a day is enough if it is interesting and informative. Click social media but be careful If you continue to share things without any special occasion without any reason, your followers may get bored and may even follow them.

Avoid exaggeration

Click social media but be careful Most of the posts are exaggerated which may make people think that you are doing this for a specific purpose, it may change their opinion about you. Click social media but be careful

The humorous aspect

Whether it’s a post or a comment on a post, take a light-hearted approach that has a humorous aspect, people enjoy it. Click social media but be careful However, there should be serious comments on very serious posts such as illness or death.

Take care of the feelings of others

If there is a grammar or any other mistake in someone’s post, it would be better to mention it in a private message instead of making it feel less practical by mentioning it in general comments, so that he feels that you are not joking about his lack of knowledge. Keep blowing

Pictures of others

Never post pictures of people or friends without their permission. Click social media but be careful If a friend has a birthday or is coming and you want to tame it, you can put a picture of a cake or something else, if you think that a picture of a friend should be added then before that Ask them

Don’t ask for likes

Click social media but be careful Of course you should post on social media but don’t ask them to like or share but leave the matter to your online friends to like if they like it. Similarly, don’t insist on asking other people for follow-up.

Read More:: How many cars did Tesla sell worldwide in 2021?

Advertisement

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here