Kabul Airport|2 Bomb attacks hit the Kabul airport in Afghanistan

kabul airport attack in afghanistan
Kabul airport attack in afghanistan

افغان میڈیا کے مطابق کابل ایئرپورٹ کے مشرقی دروازے پر پر زوردار دھماکا ہوا ہے، دھماکے کے نتیجے میں تیرہ افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوئے ہیں،ہلاک ہونے والوں میں بچے بھی شامل ہیں۔خبرایجنسی کے مطابق زخمیوں میں طالبان کے سیکیورٹی اہلکار بھی شامل ہیں۔ترجمان پینٹاگون جان کربی نے بھی کابل ایئرپورٹ پر دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ نقصان کا فوری طور پر علم نہیں ،تفصیلات اکٹھی کررہے ہیں، دوسری جانب امریکی عہدیدارنے تصدیق کی ہے کہ دھماکے میں تین امریکی فوجی زخمی ہوئے ہیں۔عرب میڈیا کے مطابق کابل ایئرپورٹ پر ہونے والا دھماکا خودکش تھا، دھماکے کے بعد ایئرپورٹ کے احاطے میں افراتفری پھیل گئی، اسی دوران فائرنگ کی آوازیں بھی سنی گئیں۔یہ بھی پڑھیں: کابل ایئر پورٹ پر بڑے حملے کا خطرہ، انتباہ جاریسوشل میڈیا پر دھماکے کے بعد زخمیوں کی تصاویر تیزی سے وائرل ہورہی ہیں، جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ دھماکے کے بعد کابل ایئرپورٹ کے اطراف دھوئیں کے گہرے بادل چھائے ہوئے ہیں جبکہ خودکش دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کو لوگ اپنی مدد آپ کے تحت ٹرالیوں میں اسپتال منتقل کررہے ہیں۔ترک میڈیا نے بھی کابل ایئرپورٹ پر ہونے والے دھماکے کو خودکش قرار دیتے ہوئے بتایا کہ دو دھماکے ہوئے ہیں، تاہم کابل ایئرپورٹ پر موجود ترک افواج محفوظ ہیں۔دھماکے کے بعد امریکی سفارت خانے نے کابل ایئرپورٹ پر موجود اپنے شہریوں کو فوری طور پر ایئرپورٹ کے احاطے سے نکلنے کی ہدایت جاری کی ہیں۔برطانیہ کی جانب سے بھی کابل دھماکے کے بعد ردعمل سامنے آگیا ہے، برطانوی وزارت دفاع کی جانب سے جاری مختصر بیان میں کہا گیا ہے کہ معلوم کررہے ہیں کہ کابل ائیرپورٹ پرکیا صورتحال ہے؟،برطانوی فوجی اور شہریوں کی حفاظت ہماری اولین ترجیح ہے۔

KABUL: Two bomb blasts near the main gate of Kabul Airport on Thursday labeled the US military a “complex attack” that killed several people as countries raced to complete their withdrawal from Afghanistan. Ary Reported

Pentagon spokesman John Kirby said the bombings killed scores of Americans and civilians, just hours after Western officials said they had intelligence that a suicide bombing had been planned at the airport.

“We can confirm that the bombing of the Abbey Gate was the result of a complex attack that resulted in the deaths of several Americans and civilians,” Kirby said in a tweet.

“We can confirm at least another explosion at or near the Baron Hotel, a short distance from the Abbey Gate,” he said.

The Baron Hotel, about 200 yards (meters) from the Abbey Gate, has been used by some Western countries as a staging point for evacuations since the airlift began on August 14.

The State Department said there were reports of gunfire.

“American citizens should avoid traveling to the airport and avoid airport gates. People at the Abbey Gate, East Gate, or North Gate should leave immediately.” it said.

Thousands have gathered near the Abbey Gate and other entrances to Hamid Karzai International Airport over the past 12 days, hoping they will be evacuated once the Taliban take control of the country.

Read More :: Will investigate retaliation and hold militants accountable: Taliban