Kashmir 12 pilgrims killed in stampede at Hindu shrine

Kashmir 12 pilgrims killed in stampede at Hindu shrine

At least 12 people have been killed and 13 others injured in a stampede at the Mata Vishnu Devi temple in Occupied Kashmir.

Kashmir 12 pilgrims killed in stampede at Hindu shrine
Kashmir 12 pilgrims killed in stampede at Hindu shrine

According to the French news agency AFP, the authorities said that the incident took place on Saturday morning due to the huge crowd of pilgrims in the temple of Mata Vishnu Devi. Authorities fear the death toll could rise.


According to India’s NDTV, a large number of Prime Minister Narendra Modi pilgrims had come for worship on New Year’s Eve and the accident took place when the pilgrims were entering Vishnu Devi Bhavan.

Prime Minister Narendra Modi has expressed his condolences to the bereaved families and said that he is deeply saddened over the loss of life due to stampede in Mata Vishnu Devi Bhavan. He announced Rs 200,000 from the National Relief Fund for the families of the dead and Rs 50,000 for the injured.


Lieutenant Governor of Indian-administered Kashmir Manoj Sinha also expressed his grief over the loss of life in the temple in his Twitter statement. He announced Rs 10 lakh for the families of the dead and Rs 2 lakh for the injured.


The temple of Goddess Mata Vishnu is one of the important places of worship for Hindus where thousands of people gather daily. It is located in the hills of Katra, 30 km from Jammu and is open 24 hours a day.

READ MORE :: TODAY GOLD RATE

کشمیر: ہندو عبادت گاہ میں بھگدڑ سے 12 یاتری ہلاک

مقبوضہ کشمیر کے ماتا وشنو دیوی کے مندر میں بھگدڑ مچنے کے نتیجے میں 12 افراد ہلاک اور 13 زخمی ہوگئے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے’اے ایف پی کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ واقعہ ہفتہ کو علی الصبح ماتا ویشنو دیوی کے مندر میں یاتریوں کے بہت زیادہ ہجوم کی وجہ سے پیش آیا۔ حکام نے ہلاکتوں میں اضافہ کا خدشہ بھی ظاہر کیا ہے۔
بھارت کے این ڈی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم نریندر مودی یاتریوں کی ایک بڑی تعداد نئے سال کے موقع پر عبادت کے لیے آئی تھی اور حادثہ اس وقت پیش آیا جب یاتری وشنو دیوی بھون میں داخل ہو رہے تھے۔

وزیراعظم نریندر مودی نے سوگوار خاندانوں سے تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ماتا وشنو دیوی بھون میں بھگڈر کی وجہ سے ہونے والے جانی نقصان پر انتہائی غمزدہ ہیں۔ انہوں نے نیشنل ریلیف فنڈ سے ہلاک شدگان کے لواحقین کے لیے 2 لاکھ جبکہ زخمیوں کے لیے 50 ہزار روپے کی امداد کا اعلان کیا ہے۔

بھارت کے زیر انتظام کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے بھی اپنے ٹویٹر بیان میں مندر میں ہونے والے جانی نقصان پر رنج و غم کا اظہار کیا۔ انہوں نے مرنےوالوں کے خاندانوں کے لیے 10 لاکھ روپے اور زخمیوں کو 2 لاکھ روپے دینے کا اعلان کیا۔

ماتا وشنو دیوی کا مندر ہندوؤں کی اہم عبادت گاہوں میں سے ایک ہے جہاں روزانہ ہزاروں افراد جمع ہوتے ہیں۔ یہ جموں سے 30 کلومیٹر کے فاصلے پر کترا کی پہاڑیوں میں واقع ہے اور 24 گھنٹے کھلا رہتا ہے۔

Author: Muhammad TalhaI am here!providing you historic books in pdf files.

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *