Corrupt Currency Fraud: Binance Will Help Pakistan Investigate

Binance Will Help Pakistan Investigate

عالمی کرپٹو کرنسی ایکسچینج کمپنی بائنانس نے پاکستانی شہروں کے تقریباً 18 ارب روپے کے فراڈ کے حوالے سے تحقیقات کے لیے پاکستان کے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) سے رابطہ کرلیا ہے۔ایف آئی اے سائبر کرائم سندھ کے سربراہ عمران ریاض نے منگل کو اردو نیوز کو بتایا کہ بائنانس نے وفاقی تحقیقاتی ادارے کو فراڈ میں ملوث 11 ایپلیکیشنز کے خلاف تحقیقات میں مدد کی یقین دہانی کرائی ہے۔

کرپٹو کرنسی فراڈ: بائنانس تحقیقات میں پاکستان کی مدد کرے گا

ایف آئی کے افسر کا مزید کہنا تھا کہ ’جمعہ کی رات بائنانس سے ٹیلیفون پر رابطہ ہوا اور پھر ہفتے کو ان کی جانب سے ای میل پر بھی رابطہ کیا گیا۔‘’بائنانس نے ایف آئی اے کے ساتھ تحقیقات میں تعاون کرنے کے لیے دو لوگوں پر مشتمل ٹیم بنادی ہے۔ ٹیم کے اراکین امریکی وزارت خرانہ کے سابق اراکین ہیں اور کرپٹو کرنسی سے متعلق امور میں مہارت رکھتے ہیں۔‘

واضح رہے پچھلے ہفتے ایف آئی اے نے پاکستان میں کرپٹو کرنسی کے حوالے سے ایک بڑے فراڈ کا انکشاف کیا تھا جس کے ذریعے پاکستان کے ہزاروں شہریوں کے ساتھ تقریباً 18 ارب روپے کا فراڈ کیا گیا ہے۔ایف آئی اے کی جانب سے کہا گیا تھا کہ ادارے کو 20 دسمبر کو پورے پاکستان سے شکایات موصول ہونا شروع ہوئیں کہ کرپٹو کرنسی کی عالمی ایکسچینج بائنانس سے جڑی 11 ایپلی کیشنز نے کام کرنا بند کر دیا ہے اور ان کے اربوں روپے کی سرمایہ کاری ڈوب گئی ہے۔

فراڈ کا پتا لگنے پر ایف آئی اے نے بائنانس پاکستان کے جنرل منیجر حمزہ خان کو بھی طلب کیا تھا تاکہ وہ ان فراڈ ایپلی کیشن کے بائنانس سے تعلق کی وضاحت کر سکیں۔ اس کے علاوہ ایف آئی اے نے امریکہ اور کے مین آئی لینڈ میں بائنانس کے ہیڈکوارٹرز کو بھی نوٹسز بھیجے تھے۔ایف آئی اے کی ابتدائی تحقیقات کے مطابق ہر ایپلی کیشن کے اوسطاً پانچ ہزار صارفین تھے اور ایچ ایف سی نامی ایپلی کیشن کے تو 30 ہزار صارف تھے۔

ان افراد کی جانب سے سو ڈالر سے لے کر 80 ہزار امریکی ڈالر تک کی سرمایہ کاری کی گئی تھی جب کہ اوسطاً ہر فرد نے دو ہزار امریکی ڈالر یعنی تقریباً ساڑھے تین لاکھ روپے تک جمع کروا رکھے تھے۔اس طرح مجموعی طور پر 10 کروڑ ڈالر کا فراڈ ہوا جو پاکستانی روپوں میں 18 ارب روپے کے برابر ہے۔ایف آئی اے کی جانب سے بھیجے گئے نوٹسز میں کہا گیا تھا کہ ممکنہ طور پر کرپٹو کرنسی سے ٹیرر فنانسنگ اور منی لانڈرنگ بھی ہو رہی تھی۔

Corrupt Currency Fraud: Bananas Will Help Pakistan Investigate

Binance, a global cryptocurrency exchange company, has approached the Federal Investigation Agency (FIA) of Pakistan to investigate the alleged fraud of about Rs 18 billion in Pakistani cities. Imran Riaz, head of FIA Cyber ​​Crime Sindh, told Urdu News on Tuesday that Binance had assured Binance Will Help Pakistan Investigate the Federal Bureau of Investigation (FBI) to assist in the investigation against 11 applications involved in the fraud.

The FI official further added that “Binance was contacted by telephone on Friday night and then by e-mail on Saturday.”Binance has formed a two-man team to co-operate with the FIA ​​in the investigation. Binance Will Help Pakistan Investigate The team members are former members of the US Treasury Department and specialize in cryptocurrency issues.

Last week, the FIA ​​had uncovered a major fraud in Pakistan regarding the corrupt currency, through which thousands of Pakistani citizens have been involved in a fraud of about Rs 18 billion. The FIA ​​said that on December 20, the agency started receiving complaints from all over Pakistan that 11 applications related to the global exchange.

currency of cryptocurrency had stopped working and their investment of billions of rupees. Has sunk Upon finding out about the fraud, the FIA ​​had also summoned Hamza Khan, general manager of BINANS Pakistan, to explain his involvement in the fraudulent application.

The FIA ​​also sent notices to the United States and the Bay of Plenty headquarters in the Cayman Islands. According to the FIA’s preliminary investigation, each application had an average of 5,000 users and the HFC application had 30,000 users. Binance Will Help Pakistan Investigate

These individuals made investments ranging from 100 to US 80,000, with an average deposit of US 2,000 per person, or about three and a half million rupees. Thus, a total of 100 million fraud was committed which is equivalent to 18 billion rupees in Pakistani rupees. The notices, issued by the FIA, said there was a possibility of terror financing and money laundering from the corrupt currency.

Read More:: Abb E Zam Zam Ideal for cooling bottles

Author: Ayesha KhanI am here! providing you latest News| Technology News |Trending Latest News Updates

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *