“Buy from us for free instead of buying pets”

for free instead of buying pets

جدہ میں جانوروں کی دیکھ بھال کے لئے پہلی نجی ایسوسی ایشن کو وزارت افرادی قوت و فروغ معاشرہ میں رجسٹرڈ کر دیا گیا ہے۔سبق ویب سائٹ کے مطابق ایسوسی ایشن کی بانی سعودی خاتون میاسر عصام بندقجی ہیں جنہوں نے 2016 میں اس کی بنیاد رکھی تھی۔

پالتو جانوروں خریدنے کے بجائے ہم سے مفت لے لیں

انہوں نے کہا ہے کہ ’ہماری ایسوسی ایشن اب سرکاری ہے، اب ہم نئے سفر کا آغاز کریں گے‘۔’ہم نے 2016 میں ایسے جانوروں کے لیے مرکز قائم کیا تھا جو مالکوں سے بھاگ جاتے ہیں یا جنہیں مالکان چھوڑ دیتے ہیں‘۔ ’مرکز میں اس وقت سے لے کر اب تک ہزاروں جانوروں کو ٹھکانہ دیا گیا، ہمارے ہاں بلیاں، کتے، پرندے،کچھوے، ہیمسٹر اور دیگر جانوروں رہے ہیں‘۔

’ہم نے مہم شروع کی ہے کہ لوگ پالتو جانور خریدنے کے بجائے ہم سے مفت میں لے لیں اور انہیں پالیں‘۔’ہماری مہم انتہائی کامیاب جا رہی ہیں، بڑی تعداد میں لوگ آتے ہیں اور اپنی پسند کے جانور لے جاتے ہیں‘۔انہوں نے کہا ہے کہ ’ہمارا دین رحمت کا ہے جو جانوروں پر بھی رحم کرنے کی تعلیم دیتا ہے‘۔

دوسری طرف مکہ مکرمہ میں وزارت ماحولیات کے دفتر کے سربراہ انجینئر سعید بن جار اللہ الغامدی نے کہا ہے کہ ’جانوروں پر ظلم کرنا قانون کی نظر میں جرم ہے‘۔’جانوروں کے ساتھ حسن سلوک کی تعلیم ہمارے دین کا ہی حصہ نہیں بلکہ یہ انسانیت کا بھی تقاضا ہے‘۔’سماجی ذمہ داریوں کا ادراک کرتے ہوئے ہم نے جانوروں کے ساتھ نرمی کرنے کی ایسوسی ایشن کو رجسٹریشن دی ہے‘۔

“Buy from us for free instead of buying pets”

The first private association for animal care in Jeddah has been registered with the Ministry of Manpower and Social Development. According to the lesson website, the founder of the association is Saudi woman Mysar Issam Bandakji who founded it in 2016. “Our association is now official, we will embark on a new journey,” he said. “We set up a center in 2016 for animals that run away from their owners or are abandoned by their owners.”

“Thousands of animals have been housed in the center since then. We have had cats, dogs, birds, turtles, hamsters and other animals.” “We have launched a campaign to get people to buy and keep pets for free instead of buying them.” “Our campaigns have been very successful, with large numbers of people coming and taking animals of their choice.” “Our religion is one of mercy, which teaches compassion for animals,” he said. for free instead of buying pets

On the other hand, Engineer Saeed bin Jarullah Al-Ghamdi, head of the office of the Ministry of Environment in Makkah, said that “cruelty to animals is a crime in the eyes of the law,” “Teaching good behavior to animals is not only a part of our religion but also a requirement of humanity.” “Recognizing our social responsibility, we have registered with the Animal Husbandry Association.”

Read More:: How many cars did Tesla sell worldwide in 2021?

Author: Ayesha KhanI am here! providing you latest News| Technology News |Trending Latest News Updates

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *