What is Bitcoin And Also the future of Bitcoin In Urdu, English

Today article We Discuss What is Bitcoin And Also the future of Bitcoin In Urdu And English, and Also Discuss Pakistanwap collected all information about What is Bitcoin And Also the future of Bitcoin from different sites like Dawan.com, GeoNews, UrduPoint, Sama tv, Hamariwab, and AryNew Urdu

What is Bitcoin And Also the future of Bitcoin In Urdu, English
What is Bitcoin And Also the future of Bitcoin In Urdu, English

What is Bitcoin And Also the future of Bitcoin English

If we study the early human history, we will find that human beings used to get what they needed by exchanging different things, which is called bartering. Used as

These valuables and possessions ranged from livestock to grain and vegetables, salt, gold and silver. Then came a time when, due to some unavoidable necessities, this method was considered inadequate and inappropriate, and according to known history, around 600 BC, King Eliatis of ancient Turkey introduced the world’s first coin, which is in the economic destiny of human beings. Proved to be the most lively chapter in the world.

When banknotes were introduced in the 17th century, people could not accept them for a long time, because innovation is often rarely accepted. But such an innovation had not yet come because this note was still running on the principles of the coin. That is, there was an intrinsic value behind the amount of the note. By determining the quantity of gold or silver, etc., these notes continued to circulate until about the 20th century, and then due to some obscure situation, this series also came to an end.

The real value of the note no longer exists. Most of the currencies found in the world are called Fiat Currency. And this currency has its value only on the basis of public trust. As if the real value of the note is only the trust we place in our institutions. This system has been in use in the world since the second half of the 20th century.

The bitcoin is the first currency of the tribe to reach its peak of popularity in a short time after its introduction in 2009. Today, its value has exceeded 1.9 million Pakistani rupees. Since then, more than a thousand more currencies have been introduced, with Ethereum, Ripple, Zcash, LiteCoin, etc. topping the list.

Read More :: How to download a video from WhatsApp status?

Read More :: Jamaluddin Naqvi, the central figure of the communist movement

What is the future of bitcoin?

Most of the experts in this field believe that cryptocurrency is the currency of the future. That is, we have now moved from the fiat currency to the era of the corrupt currency. It just needs some development and improvement so that it can be used with our current banking system. As if the future of cryptocurrency is bright.

What is Bitcoin And Also the future of Bitcoin Urdu

ابتدائی تاریخِ انسانی کا مطالعہ کریں تو معلوم ہوگا کہ انسان مختلف اشیاء کا تبادلہ کرکے اپنی ضرورت کی چیز حاصل کرتے تھے جسے بارٹرنگ کہا جاتا ہے، چونکہ قدیم کرنسی کا کوئی وجود تھا نہیں اس لیے انسان اپنی قیمتی اشیاء یا مال و ملکیت کو زر کے طور استعمال کرتا تھا۔

اِن قیمتی اشیاء اور مال و ملکیت میں مویشی جانوروں سے لے کر غلہ اور سبزیاں، نمک، سونا اور چاندی وغیرہ شامل ہوتے تھے۔ پھر ایک دور آیا کہ جب کچھ ناگزیر ضرورتوں کی بنا پر یہ طریقہ ناکافی اور غیر مناسب سمجھا جانے لگا اور معلوم تاریخ کے مطابق تقریباً 600 قبلِ مسیح میں قدیم تُرکی کے بادشاہ الیاتیس نے دنیا کا پہلا سِکہ متعارف کروایا جو کہ انسانوں کی معاشی تقدیر میں دنیا کا جاندار ترین باب ثابت ہوا۔

17 ویں صدی میں جب بینک نوٹس کا آغاز ہوا تو لوگ ایک بڑے عرصے تک اُسے قبول نہ کرسکے، کیونکہ اکثر جدت کم ہی قبول کی جاتی ہے۔ لیکن ابھی ایسی جدت بھی نہ آئی تھی کیونکہ یہ نوٹ ابھی تک سکہ ہی کے اصولوں پر چل رہا تھا۔ یعنی نوٹ کی رقم کے پیچھے اُس کی حقیقی (intrinsic) قیمت موجود تھی۔ سونا یا چاندی وغیرہ کی مقدار متعین کرکے یہ نوٹ قریب 20 ویں صدی تک چلتے رہے اور پھر کچھ غیر واضح صورتحال کی بنا پر یہ سلسلہ بھی ختم ہوگیا۔

اب نوٹ کی حقیقی قیمت موجود نہیں ہے۔ دنیا میں پائی جانے والی بیشتر کرنسی فیئٹ کرنسی (Fiat Currency) کہلاتی ہے۔ اور یہ کرنسی صرف عوامی اعتماد کی بنیاد پر اپنی قیمت رکھتی ہے۔ گویا نوٹ کی حقیقی قدر صرف وہ اعتماد ہے جو ہم اپنے اداروں پر کرتے ہیں۔ 20 ویں صدی کے دوسرے نصف سے دنیا میں یہی نظام رائج ہے۔

بٹ کوائن اس قبیل کی سب سے پہلی کرنسی ہے جو سال 2009ء میں متعارف ہو کر تھوڑے ہی عرصے میں مقبولیت کی انتہاء کو پہنچ گئی۔ آج اس کی قیمت 19 لاکھ پاکستانی روپوں سے بھی تجاوز کرچکی ہے۔ اس کے بعد ہزار سے اوپر مزید ایسی کرنسیاں متعارف کروائی گئیں جن میں ایتھیریم (Ethereum)، رئیپل (Ripple)، زی کیش (Zcash)، لائٹ کوائن (LiteCoin) وغیرہ سرِفہرست ہیں۔

بِٹ کوائن کا مستقبل کیا ہے؟

اس شعبے سے جڑے اکثر ماہرین کا خیال ہے کہ کرپٹو کرنسی ہی مستقبل کی کرنسی ہیں۔ یعنی اب ہم فیئیٹ کرنسی سے نکل کر کرپٹو کرنسی کے دور میں داخل ہوچکے ہیں۔ بس اسے کچھ ترقی اور بہتری کی ضرورت ہے تاکہ یہ ہمارے رائج بینکنگ سسٹم کے ساتھ قابلِ استعمال ہوسکے۔ گویا کرپٹو کرنسی کا مستقبل روشن ہے۔

واٹس ایپ اسٹیٹس سے ویڈیو کیسے ڈاؤن لوڈ کریں؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *